افسوس سے کہنا پڑ رہا ہے فلسطین اور کشمیر کے مسئلے پر امہ کی حیثیت سے ناکام ہوئے ، عمران خان 

اسلام آباد ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) وزیر اعظم عمران خان نےا و آئی سی وزرائے خارجہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ او آئی سی کے قیام کا مقصد  اسلامی اقدار کا تحفظ تھا مگر افسوس سے کہنا پڑ رہا ہے کہ  فلسطین اور کشمیر کے مسئلے پر امہ کی حیثیت سے ناکام ہوئے ہیں ۔

مسلم ممالک کی تعاون تنظیم کے وزرائے خارجہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ  عالمی قوانین اور سلامتی کونسل کی قرار دادیں فلسطین اور مقبوضہ کشمیر کے حق میں ہیں  اس کے باوجود مقبوضہ  کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کی گئی ، 15 مارچ کو نیوزی لینڈ میں  ایک دہشتگرد نے مسجد پر حملہ کیا ، 15 مارچ کے دن کو اسلامو فوبیا کے خلاف منانے کا اقوام متحدہ کا فیصلہ خوش آئند ہے ۔

وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ موبائل سے بھی زیادتی کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے ،بد قسمتی سے پاکستان میں  70  فیصد خواتین  کو وراثتی حق نہیں ملتا، ہم نے دانشوروں پر مشتمل رحمت للعالمین اتھارٹی بنائی ہے جو نوجوانوں کو سیرت نبویﷺ سے متعلق تعلیم دے گی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں