نیب کی ٹیم شہباز شریف کو گرفتار کیے بغیر واپسی چلی گئی

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )نیب کی ٹیم اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کو گرفتار کیے بغیر واپس چلی گئی ۔تفصیل کے مطابق نیب کی چار رکنی ٹیم پولیس کی بھاری نفری کے ساتھ ماڈل ٹاﺅن میں واقع شہباز شریف کی رہائش گاہ پہنچی تھی جہاں نیب کی ٹیم نے شہباز شریف کی رہائش گاہ میں داخل ہوئی اور دو گھنٹے تک شہباز شریف کی گرفتاری کے لیے سرچ آپریشن کیا تاہم شہباز شریف گھر میں موجود نہ تھے جس کے بعد نیب کی ٹیم واپس روانہ ہو گئی ۔اس موقع پر مسلم لیگ ن کے رہنما اور کارکنان بھی موجود تھے جنہوں نے شدید نعرے بازی کی تاہم سیکیورٹی فورسز سے کسی قسم کی مزاحمت سے پرہیز کیا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ چیئرمین جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کی منظوری کے بعد نیب کی ٹیم شہباز شریف کی رہائش گاہ پہنچی ہے۔

واضح رہے کہ آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نیب میں پیش نہیں ہوئے بلکہ تفصیلی جواب جمع کرادیا۔نیب آفس لاہور میں شہباز شریف کی پیشی کیلئے کورونا سے بچاو¿ کے خصوصی انتظامات کیے گئے تھے تاہم شہباز شریف پیش نہیں ہوئے۔اپوزیشن لیڈرشہباز شریف نے نیب میں جواب جمع کرادیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ کورونا وائرس اس وقت اپنے عروج پر ہے، نیب کے کچھ افسران بھی کورونا کا شکار ہوچکے ہیں۔شہبازشریف نے کہا کہ میری عمر 69 سال ہے اور کینسر کا مریض بھی ہوں، نیب تحقیقاتی ٹیم مجھ سے اسکائپ کے ذریعے سوالات کرسکتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں