میرپور،پرنسپل سٹیٹ کالج آف نرسنگ کا حکومتی خزانے کوماہانہ لاکھوں کاچونا ، دہنگ کرنے والے انکشافات منظرعام پر

میرپور(راجہ قیصر افضل)حکومتی خزانے کو ماہانہ لاکھوں کا چونا،پرنسپل سٹیٹ کالج آف نرسنگ نے کرائے کی عمارت خالی ہونے کے باوجود کرایہ ادا کرتی رہیں،عمارت زلزلہ کے بعد سے خالی، کرایہ کی ادائیگی مسلسل کرتے رہے تفصیلات کے مطابق پرنسپل سٹیٹ کالج آف نرسنگ میرپور فہمیدہ طارق نے طالبات کے لئے ہاسٹل کی عمارت کا کرایہ ایک لاکھ چالیس ہزار میں طے کیا گزشتہ اڑھائی تک ہاسٹل بوجہ زلزلہ خالی ہو گیا جس کی مد میں کرایہ مسلسل حکومتی خزانے سے ادا کیا جا رہا ہے ہاسٹل طالبات گھروں کو لوٹ گئیں لیکن عمارت میں واپس نہ آئیں لیکن پرنسپل موصوفہ نے اپنی لالچ کے عوض عمارت آج تک خالی نہ کی اور حکومتی خزانے کو پھکی ہر ماہ دی جا رہی ہے عوام کے پیسوں سے آفیسر عیاشی میں مصروف ہیںاس حوالے سے جب پرنسپل فہمیدہ طارق سے موقف جاننے کے لئے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے بتایا کہ نئی کلاس شروع ہونے کے بعد طالبات کو شفٹ کر دیا جائے گا زلزلہ کے بعد طالبات میں خوف پایا جاتا ہے کیونکہ ہم نے پلازہ کی آخری حصہ ایک لاکھ چالیس ہزار کے ماہانہ کرایہ پر حاصل کیا ہوا ہے پرنسپل موصوفہ کے بارے میں علم ہوا ہے کہ ڈپلومہ ہولڈر ہیں اور اٹھارویں سکیل تک پہنچ گئیں سکول میں طالبات کا ماہانہ وظیفہ، پاکستان فیڈریشن نرسز میں رجسٹریشن کے حوالے سے بھی مبینہ کرپشن ایشین نیوز عوام کے سامنے آئیندہ چند روز میں لائے گا میرپور کے سیاسی و سماجی حلقوں، وکلاء اور ہر مکتبہ فکر کے لوگوں نے چیف سیکرٹری سے اپیل کی کہ عوام کے پیسے کا ضیاع نہ کیا جائے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں