سکول جانیوالے بچے بیگز کے بوجھ سے نہ گھبرائیں۔۔۔۔حکومت نے شاندار سہولت دینے کا اعلان کر دیا

پشاور (ویب ڈیسک)محکمہ تعلیم خیبرپختونخوا نے سکول بچوں پر بستوں کا بوجھ کم کرنے کے لیے ”خیبرپختونخوا سکول بیگز ایکٹ 2019“ تیار کرلیا ہے جو جلد صوبائی اسمبلی میں منظوری کے لیے پیش کیا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق محکمہ تعلیم خیبرپختونخوا نے سکول بچوں پر بستوں کا بوجھ کم کرنے کے لیے بل لانے

کا فیصلہ کیا ہے، ایکٹ کے تحت پلے گروپ سے بارویں کلاس تک طلباءکے سکول بیگز کا وزن کم کرنے، کتابوں یا دیگر کورسز کا انضمام، سکولوں میں لاکرز اور الماری کی سہولت فراہم کرنے، سکولوں میں تختی یا سلیٹ دوبارہ متعارف کرنےسمیت دیگر اہم اقدامات بھی اٹھائے جائیں گے،جو سکول اس ایکٹ اور رولز کی خلاف ورزی کرے گا اس کے خلاف کاروائی کی جائے گی، دو لاکھ تک کا جرمانہ کیا جائے گا، محکمہ تعلیم نے محکمہ صحت اور دیگر اداروں کی مدد سے بچوں کے کلاس، عمر اور وزن کے مطابق بچوں کے سکول بیگز کا وزن مقرر کیا ہے،اساتذہ کا جانب سے بچوں کو متعلقہ دن کے ٹائم ٹیبل کے مطابق ضروری کتابیں اور نوٹ بک لانے کے ہدایات دیے جائیں گے اور اطلاع دی جائے گی۔ آئی ایم یو اورڈائریکٹریٹ آف ایجوکیشن سرکاری سکولوں میں جبکہ پرائیویٹ سکول ریگولیٹری اتھارٹی نجی سکولوں میں اس ایکٹ پر عملدرآمدیقینی بنایا جائے گا، بیگزکا وزن کم کرنے،کلاس اور بچوں کے وزن کے مطابق سکول بیگز کے مقرر کردہ وزن یقینی بنانے کے ذمہ دارہونگے۔والدین کی شکایات پر محکمہ تعلیم پختونخوا نے بچوں پر بستوں کا بوجھ کم کرنے کے لیے یہ بل تیار کیا گیا ہے،یہ ایکٹ تمام سرکاری سکولز، نجی سکولز اور مدارس پر لاگو ہو گا۔ اس ایکٹ کی منظوری کے بعد بچوں پر بستوں کے اضافی بوجھ کا خاتمہ ہو گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں