پاکستان،پولیس اہلکاروں کی لڑکی سے زیادتی،ملزمان گرفتار

وہاڑی(ویب ڈیسک) پولیس نے رتہ ٹبہ کے علاقے میں لڑکی سے زیادتی کے الزام میں 3 پولیس اہلکاروں سمیت 5 افراد کو گرفتار کرلیا۔

پنجاب کے شہر وہاڑی کے علاقے رتہ ٹبہ میں کرن نامی لڑکی نے تھانہ لڈن میں درخواست دی کہ وہ چشتیاں کی رہائشی ہے اور اپنی بہن ارم کے ساتھ اپنے منگیتر سے ملنے رتہ ٹبہ آئی تھی اور ایک ہوٹل میں موجود تھی کہ وہاں 2 پولیس اہلکار آئے جنہوں نے اس کے ساتھ اجتماعی زیادتی کی اور رقم بھی چھین لی۔ایکسپریس کے مطابق پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے 3 اہلکاروں اور ہوٹل عملہ کے دو افراد کو حراست میں لے لیا۔ آر پی او ملتان وسیم احمد خان نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے تحقیقات کا حکم دیا۔ڈی پی او وہاڑی اختر فاروق نے بتایا کہ متاثرہ لڑکی کی میڈیکل رپورٹ اور طبی معائنہ میں زیادتی ثابت نہیں ہوئی، مختلف گینگز لوگوں کو بلیک میل کرنے کے لئے ایسے حربے استعمال کرتے ہیں، لڑکی کرن بہاولنگر اور دیگر اضلاع میں بھی اسی نوعیت کے مقدمات درج کروا چکی ہے، زیادتی کا ڈرامہ رچانے والے کرداروں کو کیفر کردار تک پہنچائیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں