وزیراعظم نے اوورسیزپاکستانیوں کیلئے اہم چیزکی منظوری دیدی

اسلام آباد ( آن لائن )حکومت نے اوور سیز پاکستانیوں کے مسئال فوری حل کرنے کے لیے خصوصی ڈیسک بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔ان میں زمینوں پر قبضے ، این او سی، کریکٹر سرٹیفکیٹ اور دیگر مسائل شامل ہیں جن کے حل کیلئے اوورسیز پاکستانیوں کیلئے خصوصی ڈیسک بنائے جائیں گے۔ اس حوالے سے میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ اوورسیز پاکستانیوں کے مسائل حل کرنے کیلئے خصوصی ڈیسک کا قیام عمل میں لانے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کی تجویز وزیر اعظم کو بھیجی گئی تھی جس کی انہوں نے منظوری دے دی ہے، اب بیرون ملک سفارتخانوں

میں خصوصی ڈیسک قائم کر کے پاکستان کے تھانوں کے ساتھ لنک اپ کردیاجائے گا، بیرون ملک پاکستانی وطن آئے بغیر اپنے کیسز وہیں سے درج کروا سکیں گے۔بیرون ملک قائم سفارتخانوں کے خصوصی ڈیسک کو پولیس کی جانب سے یوزر اور پاس ورڈ فراہم کیا جائے گا، اوورسیزپاکستانیوں کو این اوسی اور کریکٹر سرٹیفیکٹ کے حصول کا طریقہ کار بھی آسان بنایا جائے گا، 7 سے 15 دن کے اندر این او سی اور کریکٹر سرٹیفیکیٹ فراہم کیا جاسکے گا۔ای میل کے ذریعے بھی سہولت فراہم کی جائے گی، اوورسیز پاکستانی مقررہ فیس کے ذریعے سہولت حاصل کرسکیں گے، اکتوبر کے پہلے ہفتے میں پراجیکٹ شروع کر دیا جائے گا۔خیال رہے کہ موجودہ حکومت کی طرف سے دعوی کیا جاتا ہے کہ اوور سیز پاکستانیوں کے مسائل کے حل کیلئے موجودہ حکومت کی جانب سے ٹھوس اقدامات کیے جا رہے ہیں۔اس حوالے سے رواں سال جولائی میں شائع ایک رپورٹ میں بتایا گیا کہ 7 روز کے دوران تارکین وطن کی 110 شکایات کا ازالہ کیا اور 22 کروڑ روپے مالیت کی پراپرٹی واگزار اور راضی نامے کے ذریعے مالکان کی حوالے کی۔یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ جولائی میں ایک ہفتے کے دوران تقریبا 99 نئی شکایات موصول ہوئیں اور یہ تمام شکایات ان کے متعلقہ ڈسٹرکٹ اوورسیز کمیٹیوں اور محکموں کو بھیج دی گئی تھیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں