کیاخواتین اپنے سرکے بال کٹواسکتی ہیں

کیا لیڈیز اپنے سر کے بال کٹوا سکتی ہیں اگر کٹوا سکتی ہیں تو کم از کم کتنے ؟اور جو عورت کی باڈی پر بال ہوتے ہیں وہ شریعت کی رو سے کٹواسکتی ہے یا نہیں ؟،بیوی مرد کے سامنے اور مرد بیوی کے سامنے ننگا ہوسکتا ہے ؟یا نہیں ؟

عورتوں کیلئے شرعی عذر کے بغیر سر کے بال کٹوانا شرعاً جائز نہیں تاہم اگر کوئی عذر ہو مثلاً بالوں کے سروں میں شاخیں نکل آئیں جسکی وجہ سے بالوں میں گرہیں پڑجائیں تو مجبوری کی بناء پر بالوں کی شاخیں ختم کرنے کیلئے معمولی تراشنا جائز ہے تاہم بدن کے بال مثلاً چہرہ،ہاتھوں ،بازووٗں،اور پائوں وغیرہ کے اضافی بال صاف کرنا جائز ہے ۔اور شوہروبیوی کا باہم ننگا ہونا اور شرمگاہوں کو دیکھنا شرعاً جائز ہے مگر شریعت میں حیا کے فطری تقاضوں کو ملحوظ رکھنے کی ترغیب دی گئی ہے ۔ 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں