“سرکاری ملازمین بھی اپنے اثاثے ظاہر کریں مگر کب تک؟” حکومت نے اعلان کردیا

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) حکومت نے تمام وفاقی وزارتوں، اداروں، چاروں صوبوں، آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کی حکومتوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ 30 جون 2019 ء کو اختتام پذیر ہونے والے مالی سال کیلئے اپنے ملازمین کے اثاثوں کی تفصیلات یکم ستمبر تک حاصل کرلیں۔اس سلسلے میں اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نے تمام وفاقی وزارتوں اور محکموں کے سیکرٹریز، چاروں صوبوں، آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کے چیف سیکرٹریز، چیئرمین قومی احتساب بیورو، وفاقی محتسب، وفاقی ٹیکس محتسب، الیکشن کمیشن آف پاکستان، انٹیلی جنس بیورو اور آڈیٹر جنرل پاکستان کو ہدایت کی ہے کہ وہ اپنے دائرہ اختیار میں کام کرنے والے ملازمین کی جانب سے اثاثے ظاہر کرنے کے عمل کو یقینی بنائیں۔رپورٹ کے مطابق ایک علیحدہ میمورنڈم میں حکومت نے مینجمنٹ گریڈ کے افسران کیلئے 15 فیصد ایڈ ہاک ریلیف فنڈ الاؤنس اور اس کے ساتھ منتخب کارپوریشنز اور خودمختار اداروں کیلئے 5 سے 10 فیصد ایڈہاک ریلیف فنڈ کا بھی اعلان کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں