بی جے پی کے رہنمانے کشمیری لڑکیوں کے حوالے سے بیان میں ہرحدپار کردی ، ہندوءوں کوکھلی چھٹی دیدی

نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت نے صدارتی حکم سے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرتے ہوئے اسے دو حصوں میں تقسیم کرنے کا اعلان کر دیا، اس اعلان کے بعد جنونی ہندوؤں کی جماعت بی جے پی کے ایک رہنما وکرم سائنی کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہے جس میں وہ کہہ رہا ہے کہ مودی کے فیصلے نے میرا سپنا پورا کر دیا ہے، پورا بھارت خوش ہے، ہر طرف نقارے بج رہے ہیں، انہوں نے بی جے پی کے کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اب مقبوضہ کشمیر جا کر پلاٹس خریدنے اور شادیاں رچانے کے
لیے آزاد ہیں کیونکہ اس صدارتی حکم کے بعد اب کوئی رکاوٹ نہیں ہے، انہوں نے کہا کہ پرجوش اور کنوارے کارکنوں کے لیے خوشی کی بات ہے کہ وہ کشمیر میں شادی کرنے کے لیے آزاد ہیں، انہوں نے کہا کہ اب کشمیر کی گوری لڑکیوں سے آپ شادی کر سکتے ہیں، بھارت کے تمام ہندو مسلم اب وہاں جا کر شادی کر سکتے ہیں۔ کشمیری لڑکیوں سے شادی کرنا اب کوئی مسئلہ نہیں رہا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں