طالبہ نے یونیورسٹی جانے کیلئے ٹیکسی بک کی لیکن راستے میں ہی ڈرائیور کی نیت خراب ہوگئی، زندگی تباہ کردی

نئی دہلی (اے جے کے نیوز)  بھارت کے دارالحکومت نئی دلی میں ایک ٹیکسی ڈرائیور نے جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) کی طالبہ کو ٹیکسی میں ہی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ایک طالبہ نے مندر مارگ کے علاقے سے یونیورسٹی جانے کیلئے ٹیکسی بک کی لیکن راستے میں ہی ڈرائیور کی نیت خراب ہوگئی اور اس نے طالبہ کو زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔ ڈرائیور رات بھر بے حال طالبہ کو سڑکوں پر گھماتا رہا جس کے بعدبیہوشی کی حالت میں اسے چھوڑ کر فرار ہوگیا۔

لڑکی ساری رات ایک پارک میں بیہوشی کی حالت میں پڑی رہی، صبح ہوئی تو انڈین انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی کے پارک میں واک کیلئے آنے والے لوگوں نے لڑکی کو اٹھایا، لڑکی کی حالت دیکھتے ہوئے مقامی لوگوں نے اسے ٹراما سنٹر منتقل کیا ۔ابتدائی طبی امداد کے بعد متاثرہ لڑکی کو جے این یو بھجوایا گیا جہاں اس کے بیان کی روشنی میں پولیس نے اس کا میڈیکل کیا۔ پولیس نے میڈیکل کی روشنی میں مقدمہ درج کرکے ملزم ٹیکسی ڈرائیور کی تلاش شروع کردی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں