اہم یورپی ملک میں مردوں کے لئے حوشخبری یہ چیز مفت فراہم کرنے کا اعلان

پیرس(مانیٹرنگ ڈیسک) یورپی ممالک کے مختلف علاقوں میں آبادی کی کمی کا سنگین مسئلہ پیدا ہو چکا ہے جہاں ایک طرف بچوں کی شرح پیدائش انتہائی کم ہو گئی اور دوسرے لوگ بڑے شہروں کی طرف نقل مکانی کر رہے ہیں۔ اب آبادی کے اس مسئلے سے نمٹنے کے لیے پیرس کے ایک قصبے کے میئر نے ایک انتہائی انوکھا فیصلہ کر لیا ہے۔ دی انڈیپنڈنٹ کے مطابق یہ قصبہ مونٹریو(Montereau) ہے جس کے میئر جین ڈیبوزے نے قصبے کے لوگوں میں جنسی قوت کی گولی ویاگرا تقسیم کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے تاکہ لوگوں کی جنسی کمزوری دور ہو اور وہ زیادہ سے زیادہ بچے پیدا کریں۔

رپورٹ کے مطابق اس قصبے کی آبادی 650نفوس پر مشتمل ہے جو کبھی ہزاروں میں ہوا کرتی تھی۔ اب بھی اس آبادی میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔ قصبے کا سکول جس میں تین دہائیاں قبل سینکڑوں طالب علم پڑھتے تھے اب وہاں صرف 30بچے رہ گئے ہیں۔ مقامی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے میئر ڈیبوزے کا کہنا تھا کہ ”وہ گاﺅں مر جاتا ہے جس میں بچے نہیں ہوتے، میں بچوں کی تعداد بڑھانے کے لیے ہر ممکن اقدامات کروں گا۔ اس کے لیے شادی شدہ جوڑوں میں ویاگرا بھی تقسیم کی جائیں گی۔ یہ گولیاں 18سے 40سال کی عمر کے لوگوں کو دی جائیں گی۔ میں چاہتا ہوں کہ ہمارا سکول اسی طرح آباد ہو جیسے کبھی ہوا کرتا تھا اور ہمارے گاﺅں کی گلیوں میں بھی بچے کھیلتے ہوئے نظر آئیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں