معروف کرکٹر کے ہاتھوں جنسی زیادتی کا نشانہ بننے والی لڑکی نے انتہائی افسوسناک تفصیلات بتا دیں

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) معروف آسٹریلوی کرکٹر الیکس ہیپبرن نے کچھ عرصہ قبل ایک لڑکی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بناڈالا تھا، جس میں اسے گزشتہ ماہ 5سال قید کی سزا سنا کر جیل بھجوایا جا چکا ہے۔ اب پہلی بار اس کی زیادتی کا شکار ہونے والی لڑکی نے افسوسناک تفصیلات دنیا کو بتا دی ہیں۔ دی مرر کے مطابق 23سالہ متاثرہ لڑکی کا کہنا ہے کہ ”ملزم کی زیادتی اور اس کے بعد مقدمے کی کارروائی کے باعث میں اس قدر ذہنی اذیت سے گزری ہوں کہ بعض اوقات ایسا لگتا ہے جیسے میرا ذہن اور جسم مفلوج ہو کر رہ گیا ہو۔ اس رات میرے ساتھ جو کچھ ہوا میں اب تک اسے نہیں بھول پائی اور جب وہ واقعہ یاد آتا ہے تو میری نیند اڑ جاتی ہے۔ ملزم کے جنسی حملے کے 4ماہ بعد مجھے سٹروک ہوا اور فوری طور پر مجھے ہسپتال لیجایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے بتایا کہ میرے جسم کی بائیں سائیڈ مفلوج ہونے کا خطرہ ہے۔ تاہم علاج سے میں صحت مند ہو گئی۔“

معروف کرکٹر کے ہاتھوں جنسی زیادتی کا نشانہ بننے والی لڑکی نے انتہائی افسوسناک تفصیلات بتا دیں

لڑکی کا کہنا تھا کہ ”ڈاکٹروں نے بتایا کہ میں ’بیلز پالسی ‘ نامی بیماری کا شکار ہو چکی ہوں جو شدید ڈپریشن سے لاحق ہوتی ہے اور چہرے کے پٹھوں کے مفلوج ہونے کا سبب بن سکتی ہے۔ اس شخص کی اس حرکت کی وجہ سے میں زندگی بھر کے لیے مفلوج ہونے سے بال بال بچی ہوں اور ابھی تک میری ذہنی حالت ایسی ہے کہ مجھے کسی بھی وقت سٹروک آ سکتا ہے۔ “ واضح رہے کہ متاثرہ لڑکی الیکس ہیپبرن کے ایک ساتھی کرکٹر 22سالہ جوئی کلارک کے ساتھ ایک کلب میں ملی تھی اور اس کے ساتھ اس کے فلیٹ پر آ گئی جہاں الیکس بھی رہتا تھا۔ وہ رات لڑکی نے کلارک کے ساتھ گزاری۔ اگلی صبح کلارک جب واش روم گیا تو الیکس کمرے میں گھس آیا اور اسے جنسی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔متاثرہ لڑکی کا کہنا تھا کہ ”پارٹی میں مجھے جوئی کلارک بہت اچھا لگا تھا، وہ بہت پرکشش تھا اور اس کی حس مزاح بھی بہت اچھی تھی چنانچہ میں اس کے ساتھ چلی گئی۔ مجھے معلوم نہیں تھا کہ وہاں میرے ساتھ یہ واقعہ پیش آ جائے گا جو میری زندگی ہی تباہ کر دے گا۔“

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں