477

دبئی،پاکستانی خاتون تین پاکستانیوں کے ساتھ جسم فروشی کرتے ہوئے گرفتار

دبئی(اے جے کے نیوز)دبئی پولیس نے جسم فروشی کادھنداکرنے والی پاکستانی خاتون اوراسے لوٹنے والے نوسربازپاکستانیوں کوگرفتارکرلیاہے۔استغاثہ کے مطابق 32 سالہ پاکستانی خاتون کے ساتھ مقیم تھی اوراپنے فلیٹ پرگاہکوں کوبلواکرپیسوں کے عوض اپنی عزت کاسوداکرتی تھی۔ایک روزخاتون کی آن لائن تصویراورنمبردیکھ کرایک پاکستنای شخص نے کال کی۔دونوں کے دورمیان دوسودرہم کے عوض بات طے پائی گئی۔تھوڑی دیربعدپاکستانی شہری اپنے دوساتھیوں کے ہمراہ خاتون کے فلیٹ میں آیااوراس سے لذت حاصل کرنے کے بعدجب پیسے دینے کی باری آئی تواسے صرف دوسودرہم پکڑائے،جس پردونوں کے درمیان تلخ کلامی ہوئی۔جس کے بعدپاکستانی ملزم نے خودکواوراپنے دونوں ساتھیوں کوپولیس اہلکارظاہرکرکے چاقونکال لیااوردھمکی دی کہ اگرانہوں نے شورمچایاتودونوں میاں بیوی کوقتل کردینگے۔ان نوسربازپاکستانیوں نے پھرپورے گھرکی تلاشی لینی شروع کردی اورہاں سے ساڑھے تین ہزاردرہم نقدی،ایک موبائل فون اورپانچ سودرہم کی دوطلائی بالیاں چھین کرفرارہوگئے۔خاتون کے معذورخاوندنے پولیس کواطلاع دی۔پولیس کی جانب سے تفتیش کی گئی تورہائشی بلڈنگ کے چوکیدارنے بتایاکہ یہ خاتون جسم فروشی کاکام کرتی ہے جس کی وجہ سے آس پاس کے لوگ بہت پریشان رہتے ہیں۔اس انکشاف پرپولیس نے پاکستانی خاتون کوگرفتارکرلیاجبکہ اسے لوٹ کرفرارہونے والے تینوں پاکستانیوں کابھی پتہ لگاکرانہیں گرفتارکیاگیا۔ان تینوں پاکستانیوں کی عمر24سے27 سال کے درمیان بتائی جارہی ہیں۔اس مقدمے کی اگلی سماعت29 اپریل2019 کوہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں