562

سردردکے باعث سوئی لڑکی اٹھی توماں بن چکی تھی،ایسی کیا وجہ ہوئی جان کرآپ حیران رہ جائینگے

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک لڑکی کو شدید سردرد ہوا اور اس پر بے ہوشی طاری ہو گئی۔ جب وہ چار دن بعد ہوش میں آئی تو ماں بن چکی تھی۔ دی مرر کے مطابق مانچسٹر کی رہائشی 18سالہ ایبونی سٹیونسن نامی اس لڑکی کو معلوم ہی نہیں تھا کہ وہ حاملہ ہو چکی ہے۔ جب وہ بے ہوش ہوئی تو اسے فوری طور پر ہسپتال پہنچایا گیا تاہم چار دن تک اسے ہوش نہ آ سکا اور اسی بے ہوشی میں ہی اس نے ایک بیٹی کو جنم دے دیا۔

ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ ”ایبونی ’یوٹرس ڈیڈیلفس‘ (Uterus didelphys)نامی عارضے کا شکار تھی۔ یہ ایسا عارضہ ہے جس میں لاحق خواتین دو بچے دانیوں کے ساتھ پیدا ہوتی ہیں۔ ایسی خواتین کے ماں بننے کے امکانات بھی کم ہوتے ہیں تاہم اگر وہ حاملہ ہو جائیں تو ان میں حمل کی علامات بہت کم نمایاں ہوتی ہیں۔دنیا میں ہر 3ہزار میں سے ایک خاتون اس مرض سے متاثر ہوتی ہے۔“

ایبونی کی ماں کا کہنا تھا کہ ”جب ہم ایبونی کو ہسپتال لائے تو ڈاکٹروں کی یہ بات سن کر مجھے شدید جھٹکا لگا کہ میری بیٹی حاملہ ہے اور اس کا ابھی آپریشن کرنا پڑے گا ورنہ اس کے پیٹ میں موجود بچے کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔“ایبونی کالج کی طالبہ ہے اور سپورٹس فزیوتھراپی پڑھ رہی ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ ”مجھے خود میں ایسی کوئی علامت کبھی محسوس نہیں ہوئی جس سے مجھے پتا چلتا کہ میں حاملہ ہو چکی ہوں۔ جب میں ہوش میں آئی اور اپنی بیٹی سے ملی تو مجھے ایسے لگا جیسے کسی سہانے خواب کی تعبیر مل گئی ہو، حالانکہ میں ابھی ماں بننے کے لیے بالکل بھی تیار نہیں تھی۔“

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں