515

سعودی عرب،ٹیکسی ڈرائیورنے گاڑی روک کرچھ سالہ بچے کی ماں کے سامنے اسکاگلاکاٹ دیا

جدہ(مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب میں ٹیکسی ڈرائیور نے ماں کی آنکھوں کے سامنے اس کے 6سالہ بیٹے کا گلا کاٹ کر اسے موت کے گھاٹ اتار دیا۔ میل آن لائن کے مطابق یہ ہولناک واقعہ مدینہ منورہ میں پیش آیا ہے جہاں خاتون اپنی والدہ اور زکریہ الجبیر نامی کم سن بیٹے کے ہمراہ ٹیکسی میں روضہ رسولﷺ کی زیارت کے لیے جا رہی تھی کہ راستے میں الطلال کے علاقے میں ڈرائیور نے ٹیکسی روکی اور بچے کو گاڑی سے نکال کر گھسیٹتا ہوا قریب واقع کافی شاپ کے پاس لے کر گیا۔ وہاں ایک خالی بوتل توڑی اور ٹوٹے ہوئے شیشے سے بچے کا گلہ کاٹ کر اسے قتل کر دیا۔

خاتون نے الزام عائد کیا ہے کہ ڈرائیور کے اس سفاکانہ جرم کی وجہ فرقہ واریت تھی۔ خاتون کا کہنا تھا کہ ڈرائیور نے دوران سفر مجھ سے میرے فرقے کے بارے میں پوچھا۔ جب میں نے اسے اپنا فرقہ بتایا تو وہ طیش میں آ گیا اور کچھ فاصلے پر گاڑی روک کر میرے بیٹے کو کھینچ کر باہر نکال لیا اور قتل کر ڈالا۔

دوسری طرف سعودی حکام کا کہنا ہے کہ ملزم ذہنی عارضے کا شکار تھا جس کے زیراثر اس نے یہ واردات کی۔ رپورٹ کے مطابق ماں نے اپنے بچے کو بچانے کی کوشش کی جس پر ملزم نے ٹوٹی ہوئی بوتل سے اسے بھی پے درپے وار کرکے شدید زخمی کر ڈالا۔ تاہم خاتون کی مدد کے لیے چیخ و پکار سن کر کچھ فاصلے پر موجود پولیس آفیسر اس کی مدد کو آ گیا اور خاتون کی جان بچا لی۔ ملزم پولیس کی حراست میں ہے اور واقعے کی تفتیش کی جا رہی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں