پہلی مرتبہ خاتون نکاح خواں نے نکاح پڑھوا دیا

 پہلی مرتبہ خاتون نکاح خواں نے نکاح پڑھوادیا،ممبئی میں مقیم مایااور شمعون کا نکاح کالکتہ کی حکیمہ خاتون نے پانچ جنوری کوپڑھوایا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق مایااوراس کے منگیتر کو ایک ویب سائٹ سے معلوم ہوا تھا کہ حکومت نے ایک خاتون قاضی کو قرآنی اور آئینی حقوق سے متعلق تربیت دی ہے ۔2016میں 29دیگر خواتین نے بھی تربیت حاصل کی تھی جن میں سے 15کو دارلعلوم نسواں کا سرٹیفکیٹ جاری کیاگیا، یہ 2016ءکے بیج میں سے پہلی شادی کی تقریب تھی ۔

بی ایم ایم اے کی شریک بانی نورجہاں صفیہ نیاز نے کہاہے کہ جوڑوں کو آگے لانا سب سے بڑا چیلنج ہے ، نئے دور کے لبرل مسلمانوں میں مزید مایا اور شمعونز کی ضرورت ہے ۔خاتون نے بتایاکہ ہم نے ایک ماہ پہلے سے کام شروع کررکھاتھا، ہمیں مہر سے متعلق فیصلہ کرنا تھااور شناختی شواہد اور فارم کو درست انداز میں پرکرنا اور جوڑے کو سارے مراحل کے بارے میں بریف کرنا تھا۔ انہوں نے بتایاکہ ہم کچھ پریشان تھے لیکن جوڑے اور ان کے مہمانوں کی طرف سے مددد کے بعد ہمارا کام آسان ہوگیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں