جموں کشمیر کے عوام کو بدترین قسم کے حالات ،گولی اور سولی کا سامنا کرنا پڑرہا ہے،ترجمان مسلم لیگ جموں کشمیر

سرینگر(www.dailyajknews.com) مسلم لیگ جموں کشمیر کے ترجمان صعاد سلفی نے بھارتی یوم آزادی کے موقع پر نرندر مودی کے اس خطاب کو الفاظ کا خوبصورت ہیر پھیر قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہم گولی گالی نہیں اور گلے لگانے کی بات کئی دہائیوں سے سنتے آرہے ہیں لیکن عملاََ جموں کشمیر کے عوام کو بدترین قسم کے حالات ،گولی اور سولی کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔انھوں نے اپنے بیان میں واضح کیا کہ ریاستی عوام پر ظلم و ستم کے پہاڑ توڑنے کے باوجود ہم نے اپنے موقف سے انحراف نہیں کیا اور ہمیشہ پُر امن طریقہ کار پر عمل درآمد کرتے ہوئے اس کے پُر امن حل کی جانب کوششیں جاری رکھی۔ترجمان نے مسٹرمودی کے بیان کو بین الاقوامی برادی کی آنکھوں میں دھونس جھونکنے کے مترادف قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس طرح کی بیانات کا مقصد اس کے سوا کچھ نہیں کہ ریاستی عوام پر توڑے جارہے مظالم پر پردہ ڈالا جائے ۔ انھوں نے نرندر مودی کا ان کے خطاب میںسابقہ وزیر اعظم اٹل بہاری واجپائی کی تھیوری کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ وہ بھارت اور بھارتی لوگوں کے لئے ایک ہیرو یا آئیڈل ہوسکتے لیکن جموں کشمیر کے عوام کے لئے انھوں نے وہی کچھ کیا جوبھارت کی سرکاری پالیسی رہی ہے اور نوجوانوں کے سینے گولیوں اور پیلٹ سے چھلنی کئے جاتے رہے ۔ترجمان نے سبھی بھارتی لیڈروں کے جموں کشمیر کے عوام سے متعلق ان کی جابرانہ پالیسی پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ سات دہائیاں گزرنے کے باوجود ان کے خون کی پیاس نہیں بجھ پائی ہے ۔صعاد سلفی نے جموں کشمیر سے متعلق اپنے موقف کو دہراتے ہوئے کہا کہ ہم ایک مسلمہ اور تسلیم شدہ تنازءکے پُر امن حل کے لئے برسر جدوجہد ہیں البتہ بھارت کی ہٹ دھرمی اس مسئلہ کے پُر امن حل میں ایک بڑی رکاوٹ ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں