برطانیہ، درندہ صفت باپ گیارہ سال تک بیٹی کو زیادتی کا نشانہ بناتا رہا

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) باپ اپنے بچوں کا محافظ ہوتا ہے لیکن برطانیہ میں ایک باپ سالہا سال تک اپنی ہی بیٹی کے ساتھ ایسی درندگی کرتا رہا ہے کہ اس سے 6بچے پیدا کر ڈالے۔ دی مرر کے مطابق اس خاتون کی عمر اب 40سال ہے۔ اس نے پولیس کو بتایا کہ اس کے باپ نے اسے 11سال کی عمر سے جنسی زیادتی کا نشانہ بنانا شروع کیا اور جب وہ 14سالہ کی تھی تب پہلی بار حاملہ ہوئی۔ اس کے بعد اس نے اپنے باپ کی جنسی زیادتیوں کے نتیجے میں 6بچوں کو جنم دیا۔

خاتون کا کہنا تھا کہ ”میرا باپ صرف مجھے ہی نہیں بلکہ میری چھوٹی بہن کو بھی اپنی ہوس کا نشانہ بناتا رہا اور دیگر مردوں کو بھی گھر لاتا اور ہمیں ان کے ساتھ جنسی تعلق قائم کرنے پر مجبور کرتا تھا۔ اس نے ہماری برین واشنگ کر رکھی تھی جس کے نتیجے میں ہم اپنے ساتھ یہ سب کچھ برداشت کرتی رہیں۔وہ ہمیں کہتا کہ ’میں تمہیں سکھا رہا ہوں کہ جب تم بوائے فرینڈ بناﺅ گی تو ان کے ساتھ تمہیں کیسے رہنا ہو گا ‘ اور کبھی کہتا کہ ’ہم روحانی ساتھی ہیں، ہم کئی جنم ایک ساتھ گزار چکے ہیں اور اس زندگی میں بھی ہم ایک ساتھ رہنے کے لیے ہی بھیجے گئے ہیں۔“

رپورٹ کے مطابق پولیس نے اس ننگ آدمیت کو گرفتار کرکے سوان سی کراﺅن کورٹ میں پیش کر دیا ہے جہاں اس کے خلاف مقدمے کی کارروائی جاری ہے اور اب تک اس پر 36بار اپنی بیٹی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کے الزامات ثابت ہو چکے ہیں۔ پولیس نے خاتون کے ہاں پیدا ہونے والے بچوں کے ڈی این اے ٹیسٹ بھی کروائے جن سے ثابت ہوا کہ لڑکی کا باپ ہی ان بچوں کا باپ تھا۔ عدالت میں پراسیکیوٹرز نے بھی بتایا کہ اس شخص نے اپنی شخصیت کو ایک پراسرار روحانی لبادے میں چھپا رکھا تھا اور اپنی بیٹیوں کو برین واشنگ کرکے اس بات کا قائل کر رکھا تھا کہ اس کے ساتھ جنسی تعلق قائم کرنا ان کا فرض ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں