سائنس نے بچوں کے دانت کاٹنے کی وجہ بتادی

لاہور (ویب ڈیسک) آپ نے اپنے اِرگرد بہت سے ایسے بچوں کو دیکھا ہوگا جن کی دانتوں سے کاٹنے کی عادت ہوتی ہے اور اکثر والدین اس بات سے پریشان بھی ہوتے ہیں کہ ان کا بچہ ہر کسی کو کاٹ لیتا ہے جو کہ بعض اوقات شرمندگی کا باعث بھی بنتا ہے۔کیا ہم نے کبھی سوچا ہے کہ بچے کی دانت کاٹنے کی وجہ کیا ہوسکتی ہے؟جیو نیوز کی رپورٹ کے مطابق حال ہی میں ایک تحقیق کی گئی ہے جس کے بعد بچوں کے دانت کاٹنے کی یہ وجہ سامنے آئی ہے کہ ایسے والدین جو اپنے بچوں کو وقت نہیں دے پاتے یا ان کے پاس اپنے بچوں کے ساتھ وقت گزارنے کا اور ان سے بات چیت کرنے کا مناسب وقت نہیں ہوتا تو ایسے بچوں میں دانت کاٹنے کی عادت جنم لیتی ہے۔ماہرین نے بچوں کے دانت کاٹنے کی ایک اور وجہ یہ بتائی ہے کہ وہ بچے جو موبائل فون، ٹی وی اور ٹیبلیٹ کا استعمال زیادہ کرتے ہیں وہ بات کرنے کی صلاحیت سے محروم ہوجاتے ہیں اور اپنے جذبات کا اظہار وہ بلاوجہ دانت کاٹنے کی صورت میں کرتے ہیں۔تحقیق میں بچوں کی نرسری کے مالک، مینیجر اور دیگر ملازمین سے اس حوالے سے پوچھا گیا جس کے بعد یہ نتیجہ اخذ کیا گیا کہ پچھلے 5 سالوں میں بچوں کے دانت کاٹنے کی شرح میں 28 فیصد اضافہ ہوگیاہے۔1000 لوگوں میں سے 62 فیصد لوگوں کا کہنا تھا کہ انہیں بچوں کے دانت کاٹنے کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ’daynurseries.co.uk‘  ویب سائٹ کی ایڈیٹر سیو لرنر جنہوں نے بچوں کے دانت کاٹنے کے حوالے سے سوالنامہ بنا کر نرسری کے لوگوں سے پوچھا تھا ان کا کہنا ہے کہ اس کا نتیجہ بے حد خطرناک نکلا ہے، جن بچوں کے پاس اپنے جذبات کو اظہار کرنے کی زبان نہیں ہوتی ایسے بچے ہی دانت کاٹنے کی عادت میں مبتلا ہوتے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ اس سے قبل دیگر تحقیق سے بھی یہ بات ثابت ہوئی ہے کہ نرسری اور کنڈرگارٹن کے بچے اپنے جذبات کو دوسروں تک پہنچانے کی صلاحیت سے محروم ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ بچوں کا موبائل فون زیادہ استعمال کرنا اور ماں باپ پر کام کا زیادہ دباو¿ جس کی وجہ سے وہ اپنے بچوں کو وقت نہیں دے پاتے یہ عادات بچوں کے اندر کی صلاحیت کو تباہ کرنے کا باعث بنتی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں